چار سو نور کی برسات ہوئی آج کی رات

معراج
چار سو نور کی برسات ہوئی آج کی رات
احد اور احمد کی ملاقات ہوئی آج کی رات
گفتگو ذات سے بالذات ہوئی آج کی رات
مختصر یہ کہ بڑی بات ہوئی آج کی رات
راکب وقت نے کھیتچی ہے زمام گردش
حیرت ارض و سماوات ہوئی آج کی رات
پوں تو الطاف تھے سرکار ﷺ بہ روزکن سے
وامگر چشم عنایات ہوئی آج کی رات
رفعت عبد کو جبریل امیں نے دیکھا
کیوں نہ ہو رافع درجات ہوئی آج کی رات
پردہ میم کے اندر ہے مقام محمود
کاشف سر حجابات ہوئی آج کی رات
قاب قوسین سے دوگام ورا جا لکلا
عقل والوں کو بڑی مات ہوئی آج کی رات
جملہ ایام سے تابندہ ہے میلاد کا دن
جملہ راتوں سے حسین رات ہوئی آج کی رات
آج کی رات ہے عبادات کا ثمرہ واصف
حمد و نسبیح و مناجات ہوئی آج کی رات

Print Friendly, PDF & Email

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*