بعد از خدا بزرک توئی

بعد از خدا بزرک توئی
یا نبی ﷺ تیرا کرم درکار ہے
آزمائش میں میرا کردار ہے
دشمنان دین کے نرغے میں ہوں
حادثات دہر کی یلغار ہے!
یا حبیب اللہ ﷺ تیرا ذکر بھی!
آج کے ماحول میں دشوار ہے
ہر نظر سہمی ہوئی ہر دل اداس
زندگی اب زندگی پر بار ہے
عہد ماضی میں جو امت تھی چٹان
آج وہ گرتی ہوئی دیوار ہے
دین پر دنیا مسلط ہو گئ
تیری امت بے کس و نادار ہے
دین کی خاطر ملا تھا یہ وطن!
دین کا آئین ہی درکار ہے
دین کیا ہے تیری الفت کے سوا
دین کا بس اک بہی معیار ہے
تو ﷺ نظر پھیرے تو طوفاں زندگی!
تو ﷺ نظر کر دے تو بیڑا پار ہے!

Print Friendly, PDF & Email

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*