انوار برست رہتے ہیں اس پاک نگر کی راہوں میں

انوار برست رہتے ہیں اس پاک نگر کی راہوں میں
اک کیف کا عالم ہوتا ہے طیبے کی مست ہواؤں میں
اس نام محمد ﷺ کے صدقے بگڑی ہوئی قسمت بنتی ہے
اس کو بھی پناہ مل جاتی ہے جو ڈوب گیا ہو گناہوں میں
گیسوۓ محمد ﷺ کی خوشبو اللہ اللہ کیا خوشبو ہے!
احساس معطر ہوتا ہے واللیل کی مہکی چھاؤں میں!
وہ بانی دین مبین بھی ہے حم بھی ہے یسن بھی ہے
مسکینوں میں مسکین بھی ہے سلطان زمانہ شاہوں میں
سب جلوۓ ہیں اس صورت کے ، وہ صورت ہی وجہ اللہ ےہ
اللہ نظر آ جاتا ہے وہ صورت جب نگاہوں میں!
اللہ کی رحمت کے جلوے اس وقت میسر ہوتے ہیں
سجدے میں ہوں جب آنکھیں پرنم اور نام محمد ﷺ آہوں میں
اس ناطق قرآن کی مدحت انسان کے بس کی بات نہیں
ممدوح خدا ہیں وہ واصف صد شکر کہ ہم ہیں گداؤں میں

Print Friendly, PDF & Email

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*