اللہ ہو جب اس کی ثنا گر ، نعت کہوں میں کیسے

اللہ ہو جب اس کی ثنا گر ، نعت کہوں میں کیسے
میں قطرہ وہ ایک سمندر ، نعت کہوں میں کیسے
صدیاں بیتیں آج بھی اس کا ہے گھر گھر اجیارا
روشن روشن نور کا پیکر ، نعت کہوں میں کیسے
اس کا نام جگت کی رحمت ، وہ مصری کا میٹھا پربت
میں بہتی ندیا میں کنکر ، نعت کہوں میں کیسے
میں کمزور خطا کا پتلا ، وہ ظاہر باطن کا اجلا
وہ مرسل ، ہادی ، بیغمبر ، نعت کہوں میں کیسے
مسکینوں میں مسکین ہے سلطانوں میں عرش نشیں ہے
وہ طہ، حم ، مد ثر ، نعت کہوں میں کیسے
بات بڑی میں انسان خاکی ، نعت نبی ﷺ کی حمد خدا کی
ہو چائیں نہ لفظ برابر ، نعت کہوں میں کیسے

Print Friendly, PDF & Email

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*