میں منیا نال یقین دے ، میں ویکھیا اکھاں نال

میں منیا نال یقین دے ، میں ویکھیا اکھاں نال اوہدے ہتھ کھنڈی یسن دی ، اوہدے گھنگر والے بال اوہدے چارے پاسے نور ہے ، اوہدا ہرجا عین ظہور ہے اساں پیراں تے سرسٹیا، اساں چھذے سب جنجال اوہدی Continue reading میں منیا نال یقین دے ، میں ویکھیا اکھاں نال

توں سلطان زمانے بھر دا میں بردے دا بردا

توں سلطان زمانے بھر دا میں بردے دا بردا فکر عذاباں دے وچ بھلیا رستہ تیرے گھر دا تیری نعت نوں غزل بناندا دل سی داہڈا کردا دسن وال گل نئیں کوئی کاسہ نئیں پیا بھردا ساڈی دھرتی نظر کرم Continue reading توں سلطان زمانے بھر دا میں بردے دا بردا

اچی تھاں تے نیوں لگایا دل میرا پیا ڈردا

اچی تھاں تے نیوں لگایا دل میرا پیا ڈردا او سلطان زمانے بھردا میں بردے دا بردا کول بلاواں تے ہتھ نہ پلے، مونہہ ویکھاں میں گھردا واصف یار تسلیاں دیوے ملن دی گل نہ کردا

د درود سلام کروڑاں جس دی شان ہے عالی

د درود سلام کروڑاں جس دی شان ہے عالی سادر روضہ نظریں آیا جیوے باغ دا مالی باغ امت دا ساوا ہو یا دتی یار وکھالی واصف یار مرن توں پہلے مرناں گل نرالی

انوار برست رہتے ہیں اس پاک نگر کی راہوں میں

انوار برست رہتے ہیں اس پاک نگر کی راہوں میں اک کیف کا عالم ہوتا ہے طیبے کی مست ہواؤں میں اس نام محمد ﷺ کے صدقے بگڑی ہوئی قسمت بنتی ہے اس کو بھی پناہ مل جاتی ہے جو Continue reading انوار برست رہتے ہیں اس پاک نگر کی راہوں میں

تصویر حسن بے نشاں صلّ علی صلّ علی

تصویر حسن بے نشاں صلّ علی صلّ علی لا ریب شاہ خسرواں صلّ علی صلّ علی اے چہرہ زیباۓ تو شمس الضحح بدر الدّجی ارحم لنا اے جان جاں صلّ علی صلّ علی مازاغ چشم سرمگیں ، واللیل زلف عنبریں Continue reading تصویر حسن بے نشاں صلّ علی صلّ علی

جنہیں تیرا نقش قدم ملا، وہ غم جہاں سے نکل گۓ

جنہیں تیرا نقش قدم ملا، وہ غم جہاں سے نکل گۓ یہ میرے حضور ﷺ کا فیض ہے کہ بھٹک کے ہم جو سنبھل گۓ پڑھو صل علی نبینا صل علی محمد ﷺ پڑھو صل علی شفیعنا صل علی محمد Continue reading جنہیں تیرا نقش قدم ملا، وہ غم جہاں سے نکل گۓ

اے شہ انس و جاں جمال جمیل

اے شہ انس و جاں جمال جمیل تجھ پہ تخلیق حسن کی تکمیل رہبر انبیا و ختم رسل ذاکر و تذکرہ ربّ جلیل دم عیسی علیہ سلام کہ ہو بیضی والضحی کی نہ مثل ہے نہ مثیل نور مطلق کا Continue reading اے شہ انس و جاں جمال جمیل

کرتے ہیں کرم جس پہ بھی سرکار ﷺ مدینہ

کرتے ہیں کرم جس پہ بھی سرکار ﷺ مدینہ ہوتا ہے نصیب اس کو ہی دیدار مدینہ پڑھتا ہے درود آپ ﷺ کی جو ذات پہ ہر دم ملتا ہے اسے سایہ دیوار مدینہ اس شخص کو دنیا کا کوئی Continue reading کرتے ہیں کرم جس پہ بھی سرکار ﷺ مدینہ

بام اقصے سے چلا رشک قمر آج کی رات

بام اقصے سے چلا رشک قمر آج کی رات فرش رہ ہو گئ تاروں کی نظر آج کی رات مثلکم ہی سہی انسان ، مگر آج کی رات عرش پر کرنے گیا ہے وہ بسر آج کی رات ڈھل گۓ Continue reading بام اقصے سے چلا رشک قمر آج کی رات