زائر و پاس ادب رکھو ہوس جانے دو

زائر و پاس ادب رکھو ہوس جانے دو آنکھیں اندھی ہوئی ہیں ان کو ترس جانے دو سوکھی جاتی ہے اُمید غربا کی کھیتی بوندیاں لکۂ رحمت کی برس جانے دو پلٹی آتی ہے ابھی وجد میں جان شیریں نغمۂ Continue reading زائر و پاس ادب رکھو ہوس جانے دو

یاد میں جس کی نہیں ہوش تن و جاں ہم کو

یاد میں جس کی نہیں ہوش تن و جاں ہم کو پھر دکھادے وہ رخ اے مہر فروزاں ہم کو دیر سے آپ میں آنا نہیں ملتا ہے ہمیں کیا ہی خود رفتہ کیا جلوۂ جاناں ہم کو جس تبسم Continue reading یاد میں جس کی نہیں ہوش تن و جاں ہم کو

حاجیو آؤ شہنشاہ کا روضہ دیکھو

حاجیو آؤ شہنشاہ کا روضہ دیکھو کعبہ تو دیکھ چکے کعبہ کا کعبہ دیکھو رُکن شامی سے مٹی وحشت شامِ غربت اب مدینہ کو چلو صبح دل آرا دیکھو آب زمزم تو پیا خوب بجھائیں پیاسیں آؤ جودِ شہِ کوثر Continue reading حاجیو آؤ شہنشاہ کا روضہ دیکھو

کیا مہکتے ہیں مہکنے والے

کیا مہکتے ہیں مہکنے والے بو پہ چلتے ہیں بھٹکنے والے جگمگا اٹھی مری گور کی خاک تیرے قربان چمکنے والے مہ بے داغ کے صدقے جاؤں یوں دمکتے ہیں دمکنے والے عرش تک پھیلی ہے تاب عارض کیا جھلکتے Continue reading کیا مہکتے ہیں مہکنے والے

نبی سرورِ ہر رسول و ولی ہے

نبی سرورِ ہر رسول و ولی ہے نبی راز دارِ مَعَ اللہ لی ہے وہ نامی کہ نامِ خدا نام تیرا رؤوف و رحیم و علیم و علی ہے ہے بیتاب جس کیلئے عرش اعظم وہ اس رہر و لامکاں Continue reading نبی سرورِ ہر رسول و ولی ہے

صبح طیبہ میں ہوئی بٹتا ہے باڑا نور کا

صبح طیبہ میں ہوئی بٹتا ہے باڑا نور کا صدقہ لینے نور کا آیا ہے تارا نور کا باغ طیبہ میں سہانا پھول پھولا نور کا مست بو ہیں بلبلیں پڑھتی ہیں کلمہ نور کا بارھویں کے چاند کا مجرا Continue reading صبح طیبہ میں ہوئی بٹتا ہے باڑا نور کا

عارض شمس و قمر سے بھی ہیں انوار ایڑیاں

عارض شمس و قمر سے بھی ہیں انوار ایڑیاں عرش کی آنکھوں کے تارے ہیں ہو خوشتر ایڑیاں جا بجا پر تو فگن ہیں آسماں پر ایڑیاں دن کو ہیں خورشید شب کو ماہ اُختر ایڑیاں نجم گردوں تو نظر Continue reading عارض شمس و قمر سے بھی ہیں انوار ایڑیاں

سُنتے ہیں کہ محشر میں صرف اُنکی رسائی ہے

سُنتے ہیں کہ محشر میں صرف اُنکی رسائی ہے گر اُن کی رسائی ہے لو جب تو بن آئی ہے مچلا ہے کہ رحمت نے امید بندھائی ہے کیا بات تری مجرم کیا بات بنائی ہے سب نے صفِ محشر Continue reading سُنتے ہیں کہ محشر میں صرف اُنکی رسائی ہے

چمک تجھ سے پاتے ہیں سب پانے والے

چمک تجھ سے پاتے ہیں سب پانے والے مرا دل بھی چمکا دے چمکانے والے برستا نہیں دیکھ کر ابر رحمت بدوں پر بھی برسا دے برسانے والے مدینے کے خطے خدا تجھ کو رکھے غریبوں فقیروں کے ٹھہرانے والے Continue reading چمک تجھ سے پاتے ہیں سب پانے والے

عرش حق ہے مسند رفعت رسول اللہ کی

عرش حق ہے مسند رفعت رسول اللہ کی دیکھنی ہے حشر میں عزت رسول اللہ کی قبر میں لہرائیں گے تا حشر چشمے نور کے جلوہ فرما ہو گی جب طلعت رسول اللہ کی کافروں پر تیغ والا گرمی برقِ Continue reading عرش حق ہے مسند رفعت رسول اللہ کی